روس نے جدید بکتر بند گاڑیوں کو اینٹی ایئر ٹینک سے مزین کر دیا

روسی یاروسلاوول صوبے میں کی جانے والی روسی پیراٹروپر فورسز کی مشقوں میں جدید BMD-4M اور BTR-MDM (راکوشکا) بکتر بند گاڑیاں سامنے آئیں جو 2020 اور 2021 میں پیراٹروپرز کو پہنچائی گئیں ۔

روسی وزارت دفاع کے ایک بیان کے مطابق ان میں سے کچھ 23 ملی میٹر خودکار ڈبل کیلیبر توپ سے لیس تھے ۔ یہ صرف سکریجیٹ بکتر بند گاڑی میں استعمال ہوا ہے ۔

پیراٹروپرز کور کے ترجمان نے بتایا کہ توپ کا وزن 950 کلو گرام ہے اور راکوشکا بکتر بند گاڑی کا وزن 13،200 کلو گرام ہے جبکہ خودکار توپ کی رفتار 2000 راؤنڈ فی منٹ ہے اور ہوائی اہداف کی پرواز کی بلندی مارا جانا 1500 میٹر ہے ۔

یہ بندوقیں 2500 میٹر کے فاصلے پر زمینی اہداف پر بھی استعمال کی جا سکتی ہیں جہاں 190 گرام کا گولہ دشمن کے ہلکے کوچ کو مارتا ہے ۔

واضح رہے کہ راکشکا بکتر بند گاڑی پکی سڑکوں پر 70 کلومیٹر فی گھنٹہ اور کچی سڑکوں پر 45 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے چل سکتی ہے ، ایک ڈیزل انجن کی بدولت جو 500 ہارس پاور پیدا کرتا ہے ۔ بکتر بند گاڑی 10 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے پانی کی رکاوٹوں کو بھی عبور کر سکتی ہے ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles