برطانوی وزیراعظم کی شہریوں سے پرسکون کی اپیل

برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن نے بڑے شہروں کے اسٹیشنوں میں ایندھن ختم ہونے کی وجہ سے گھبراہٹ سے خریداری کے بعد اپنے لوگوں کے خوف کو دور کرنے کی کوشش کی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کرسمس سے قبل سپلائی چین کو تیار کرنے کی تیاری کر رہی ہے ۔

جانسن نے پریس بیان میں کہا ہے کہ ایندھن کی قلت پر پہلے ہی ایک حد تک "مایوسی اور غصہ” تھا لیکن اس نے زور دیا کہ سپلائی واپس آرہی ہے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ گیس اسٹیشنوں پر صورتحال بہتر ہو رہی ہے حالانکہ کئی علاقوں کے سینکڑوں اسٹیشن بند رہے جبکہ کار مالکان نے گھنٹوں ایندھن کی تلاش میں گزارے ۔

جانسن نے کہا ہے کہ اب ہم صورتحال بہتر ہونے کا مشاہدہ کر رہے ہیں ۔ ہم انڈسٹری (ایندھن کی صنعت) سے سنتے ہیں کہ سپلائی معمول کے مطابق اسٹیشنوں پر واپس آرہی ہے اور میں واقعتا ہر ایک سے مطالبہ کرتا ہوں کہ وہ اپنے کاروبار کو معمول کے مطابق کرے ۔

انہوں نے زور دیا کہ ہم چاہتے ہیں کہ اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ ہمارے پاس کرسمس تک اور اس سے آگے تمام ضروری تیاری ہو ، نہ صرف ایندھن بھرنے والے اسٹیشنوں کے حوالے سے بلکہ پوری سپلائی چین میں ۔

اس نے مزید کہا کہ میں سب سے پہلے یہ کہنا چاہتا ہوں کہ میں ان لوگوں کے ساتھ کتنی ہمدردی رکھتا ہوں جو اپنے سفر کے بارے میں فکر مند تھے اور اس بات سے پریشان تھے کہ آیا وہ اپنی کاروں کو اپنے پیاروں کو دیکھنے کے لیے عام طریقے سے استعمال کر سکیں گے یا نہیں ۔ میں جانتا ہوں کہ وہ پٹرول یا ایندھن کی کمی کے بارے میں کتنے مایوس اور ناراض ہوں گے ۔

یاد رہے کہ ہفتے کے آخر میں ایندھن کی فراہمی کے مسائل سامنے آنے کے بعد جانسن کا یہ پہلا بیان ہے جب آئل کمپنیوں نے ریفائنریز سے اسٹیشنوں تک پٹرول اور ڈیزل کے حصول میں مشکلات کی اطلاع دی ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles