مغربی کنارے میں فلسطینی نوجوانوں اور غاصب فوجیوں میں جھڑپیں

یونیورسٹی کے درجنوں طلباء اور قابض افواج کے مابین مقبوضہ مغربی کنارے میں بیت ال بستی کے سامنے البیرے شہر کے شمالی دروازے پر جھڑپیں ہوئیں ۔

برزیٹ یونیورسٹی کے درجنوں طلباء جینین میں پانچ مزاحمتی جنگجوؤں کے قتل کی مذمت کرنے گئے اور بیت المقدس پر قبضہ کر لیا جہاں مظاہرین نے سڑکوں کو بلاک کرنا شروع کیا اور ٹائر جلا کر راستے بند کر دیئے ۔

نوجوانوں نے قابض افواج پر پتھر پھینکے جبکہ فوجیوں نے بڑے پیمانے پر گیس بم داغے اور جان بوجھ کر شہریوں کی گاڑیوں کو نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں متعدد نوجوانوں کا دم گھٹ گیا ۔ فوجیوں نے ربڑ کی گولیاں بھی چلائیں جس سے ایک فوٹو جرنلسٹ بھی زخمی ہوا ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles