بیجنگ تمام فریقوں کے ساتھ مل کر عالمی ترقیاتی اقدام کر رہا ہے ، چینی وزیر خارجہ

چینی وزیر خارجہ وانگ یی نے کہا کہ چین عالمی ترقیاتی اقدام کو آگے بڑھانے کے لیے تمام فریقوں کے ساتھ مل کر کام جاری رکھے گا اور پائیدار ترقی کے لیے اقوام متحدہ کے 2030 کے ایجنڈے پر عملدرآمد کو تیز کرنے اور تمام ممالک کے لوگوں کو فوائد پہنچانے کے لیے مثبت شراکت کرے گا ۔

وانگ نے یہ ریمارکس ویڈیو لنک کے ذریعے 2021 پائیدار ترقیاتی فورم کی افتتاحی تقریب میں شرکت کے دوران دیئے ۔

” وانگ نے کہا ہے کہ چینی صدر شی جن پنگ کی عالمی ترقیاتی پہل کی تجویز ، اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 76 ویں سیشن کی عمومی بحث کے لیے اپنے ویڈیو بیان میں تمام ممالک کی ترقی اور بین الاقوامی ترقیاتی تعاون کے لیے ایک خاکہ پیش کیا اور اس کورس بین الاقوامی سطح پر عالمی ترقی اور ترقیاتی تعاون کو آگے بڑھانے کا چارٹ قرار دیا ۔

اس بات کو نوٹ کرتے ہوئے کہ کورونا ، بین الاقوامی برادری بالخصوص ترقی پذیر ممالک کے لیے بہت سے بحرانوں اور چیلنجوں کو لے کر آیا ہے ۔ پائیدار ترقی کے لیے اقوام متحدہ کے 2030 کے ایجنڈے کو نافذ کرنے اور ترقیاتی تعاون کی اہمیت کمزور نہیں ہوئی بلکہ بڑھ گئی ہے ۔ چین عالمی ترقیاتی اقدام کو عملی جامہ پہنانے ، سیاسی عزم کو مضبوط بنانے اور بین الاقوامی ترقی کے مقصد کو آگے بڑھانے کے لیے عملی اقدامات کرنے کے موقع سے فائدہ اٹھانے کا مطالبہ کرتا ہے ۔

وانگ نے تمام فریقوں پر زور دیا کہ وہ وبائی مرض کے خلاف تعاون کو مزید گہرا کریں اور مشترکہ طور پر اس چیلنج پر قابو پائیں ، معاشی بحالی کو فروغ دینے کے لیے میکرو پالیسی کوآرڈینیشن کو تیز کریں ، سبز اور کم کاربن کی ترقی پر عمل کریں تاکہ موسمیاتی تبدیلی کا مؤثر طریقے سے جواب دیا جا سکے ، انصاف اور انصاف کو برقرار رکھا جا سکے ترقی کے لیے سازگار ماحول ، حقیقی کثرتیت کو برقرار رکھنا اور شراکت کو عالمی ترقی میں گہرا کرنا ۔

فورم کا انعقاد آن لائن اور روایتی طریقوں سے کیا گیا جس کا موضوع "انسانی مرکزیت پائیدار ترقی” تھا اور اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس نے فورم کے دوران ایک تحریری تقریر کی ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles