یمنی وزیر دفاع کا البیضا میں آزاد شدہ علاقوں کا دورہ

یمنی وزیر دفاع میجر جنرل محمد ناصر العاطفی نے الصومعہ اور مسورہ کے ڈائریکٹوریٹس کا دورہ کیا ۔ انہوں نے مجاہدین کو اس کامیابی پر مبارکباد دی اور کہا کہ جب تک حملہ آوروں اور قابضین کو شکست نہیں ہوتی ، جنگ جاری رہے گی ۔

القاعدہ اور داعش سے تکفیری عناصر کے آخری مضبوط گڑھوں کو پاک کرنے کے بعد وزیر دفاع میجر جنرل محمد ناصر العاطفی نے الصومعہ اور مسورہ کے ڈائریکٹوریٹس کا دورہ کیا ، فوج اور عوامی کمیٹیوں کے مجاہدین کی اس کامیابی کی تعریف کی جو اللہ کی طرف عطا ہوئی ہے ۔

جنرل عاطفی نے تکفیری عناصر کے چند گنبدوں کے دورے کے دوران حملہ آوروں اور ان کے عسکریت پسندوں سے ملک کی تطہیر جاری رکھنے کی تصدیق کرتے ہوئے آزادی اور آزادی کے حصول تک محاذوں کو متحرک اور سپورٹ جاری رکھنے کی اہمیت پر زور دیا ۔

اپنے دورے کے دوران میجر جنرل العاطفی نے آزاد کردہ صوبوں کے لوگوں کو یقین دلایا کہ فوج اور کمیٹیاں ملک کو آزاد کرانے اور زمین اور عزت کو قابض حملہ آوروں سے محفوظ رکھنے میں ان کا ساتھ دیں گی ۔

گذشتہ روز یمنی مسلح افواج کے ترجمان بریگیڈیر جنرل یحیی سریع نے کہا تھا کہ فجرالحریہ نامی آپریشن میں سب سے پہلے سعودی عرب کے اتحادی القاعدہ اور داعش کے عناصر کو نشانہ بنایا گیا اور یمنی فوج نے گزشتہ 48 گھنٹے کے دوران الصومعہ، مسورہ اور مکیراس کے کچھ علاقوں کو آزاد کرا لیا جس کی رقبہ 2700 کیلومیٹر مربع ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ یمنی فوج اور رضاکار فورس کی پیشرفت کو روکنے اور تکفیری عناصر کو بچانے کے لئے سعودی اتحاد نے 30 سے زائد فضائی حملے کئے جبکہ ہماری میزائل اور ڈرون یونٹ نے اس دوران دشمنوں کے ٹھکانوں پر نشانہ بنانےکے لئے 10 بار حملے کئے ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles