مرکل کا 16 سالہ دور اقتدار اختتام پذیر ، اتوار کو قانون ساز انتخابات ہوں گے

جرمنی 16 سال اقتدار میں رہنے کے بعد اتوار کے روز قانون ساز انتخابات میں انجیلا مرکل کا صفحہ بدل دے گا ۔ توقع کی جارہی ہے کہ توقع ہے کہ حسب سابق حکومتی اتحاد قائم کرنے کے عمل میں وقت لگے گا ۔

2005 سے ملک پر حکومت کرنے والی چانسلر کے جانے سے جرمنی میں ایک نئے سیاسی دور کا آغاز ہوا ۔ 1949 کے بعد یہ پہلا موقع ہے کہ حکمران چانسلر انتخابات میں حصہ نہیں لے رہا ۔

جرمنی کے یورپی پڑوسیوں کی نظریں اس الیکشن پر مرکوز ہیں کیونکہ یورپی یونین کے معاملات پر برلن کا اثر و رسوخ اہم سمجھا جاتا ہے ۔

انگیلا میرکل کے سیاست سے کنارہ کش ہونے کے اعلان کے بعد سے یہ عام تاثر ہے کہ نارتھ رائن قیسٹ فالیا کے وزیر اعلیٰ ملک کے اگلے چانسلر بن سکتے ہیں ۔ یہ کئی لوگوں کا خیال بھی رہا ہے ۔ لاشیٹ موجودہ جرمن پارلیمنٹ کی سب سے بڑی سیاسی جماعت کرسچن ڈیموکریٹک یونین یا سی ڈی یو کے سربراہ ہیں ۔ رائے عامہ کے جائزوں میں انہیں فی الوقت دوسری پوزیشن حاصل ہے ۔

منگل کو شائع ہونے والے ایک رائے شماری میں سوشل ڈیموکریٹک پارٹی نے 25 ووٹ حاصل کیے جبکہ کرسچن ڈیموکریٹک یونین کے لیے 22 ، گرین پارٹی کے لیے 15 ووٹ حاصل کیے ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles