مغربی شہر ہرات میں دھماکے میں سات افراد ہلاک، داعش نے ذمہ داری قبول کر لی

افغانستان کے مغربی شہر ہرات میں منی بس میں بم دھماکے کے نتیجے میں کم از کم 7 افراد ہلاک ہو گئے۔
افغان طلوع نیوز چینل نے محکمہ صحت کے حکام کے حوالے سے بتایا کہ دھماکہ ایک کار بم کی وجہ سے ہوا جو 12ویں سیکورٹی زون میں ہوا جس میں 4 خواتین اور 3 مردوں سمیت 7 افراد ہلاک اور 9 زخمی ہوئے۔
ہرات کے علاقائی ہسپتال کے سربراہ عارف جلالی نے تصدیق کی کہ "سات متاثرین میں چار خواتین بھی شامل ہیں۔”
اس سلسلے میں، صوبہ ہرات کے مرکز ہرات شہر میں سیکورٹی سروسز نے تصدیق کی ہے کہ انہوں نے واقعے کی تحقیقات شروع کر دی ہیں۔
صوبائی پولیس نے نوٹ کیا کہ گزشتہ عرصے میں افغانستان میں سیکیورٹی کی صورت حال میں قدرے بہتری آئی ہے، تاہم، ملک بھر میں ہر ہفتے متعدد حملوں کی اطلاع ملتی ہے۔
اپنی طرف سے، دہشت گرد تنظیم "داعش” نے ٹیلی گرام پر اپنے اکاؤنٹ پر، ہفتے کے روز افغان شہر ہرات میں ہونے والے حملے کی ذمہ داری قبول کی ہے۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles