چاولوش: یوکرین سے اناج کے لیئے نقل و حرکت کے لیئے ایک محفوظ زون کا قیام ہونا چاہیئے۔

برطانوی وزیر خارجہ سرکاری دورے پر انقرہ میں موجود ہیں جہاں انہوں نے اپنے ہم منصب میولت چاوش اوغلو کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس کی ہے۔مشترکہ پریس کانفرنس میں ترک وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ روس یوکرین کے باعث دنیا بھر میں خوراک کا بحران دیکھنے میں آرہا ہے اس کے لیئے ضروری ہے کہ اقوام متحدہ کے اس منصوبے پر عمل کیا جائے جس کے مطابق یوکرین سے اناج کے لیئے ایک محفوظ زون بنایا جا سکے اگر ایسا ہوجائے تو بحیرہ اسود ایک محفوظ زون بن سکتا ہے۔انہوں نے مزید کہا، "اگر اس منصوبے پر اتفاق ہو گیا تو، بحری جہازوں کی پیش رفت پر نظر رکھنے کے لیے استنبول میں ایک فالو اپ سینٹر قائم کیا جائے گا۔ترک وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ اس پیشترفت سے متعلق روس کا رویہ بھی مثبت ہے۔جبکہ مشترکہ پریس کانفرنس میں برطانوی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ برطانیہ اور ترکی یوکرین کی سرزمین سے اناج کی برآمد کے معاملے پر مل کر کام کر رہے ہیں اور ہم نے بحیرہ اسود کو محفوظ زون بنانے سے متعلق بھی تفصیلی تبادلہ خیال کیا ہے۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles