افغانستان میں 20 سال سے جاری تنازع ختم کر دیا ہے ، بائیڈن

امریکی صدر جو بائیڈن نے کہا کہ ان کے ملک نے افغانستان میں 20 سال سے جاری تنازع کا خاتمہ کر دیا ہے ۔ جس سے سفارت کاری کے نئے دور کا آغاز ہو رہا ہے ۔

انہوں نے نیویارک میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 76 ویں سیشن میں اپنی تقریر کے دوران کہا کہ امریکہ اپنا دفاع کرے گا اور ضرورت پڑنے پر طاقت کا استعمال کرے گا ۔ ایٹمی حملے نمٹنے میں آخری آپشن ہونے چاہئے ۔

یورپی یونین کے ساتھ اپنے ملک کے تعلقات کے بارے میں انہوں نے کہا کہ ہم نے یورپی یونین کے ساتھ اپنے عزم کی تجدید کی ہے جو اس وقت ہمیں درپیش بہت سے مسائل میں اہم شراکت دار ہے ۔

کورونا وائرس کے پھیلاؤ پر بائیڈن نے اس بات پر زور دیا کہ کورونا وائرس جیسے مشترکہ چیلنجز کا مقابلہ کرنے کے لیے بین الاقوامی کوششوں پر توجہ مرکوز کرنی چاہیے اور کورونا وائرس کے خلاف ویکسین کی تقسیم کے لیے کوواکس کے ساتھ مل کر کام کرنا چاہیے ۔

امریکی صدر نے وضاحت کی کہ امریکہ نے عالمی وباء سے نمٹنے کے لیے اربوں ڈالر خرچ کیے ہیں اور 100 سے زائد ممالک کو ویکسین کی 500 ملین خوراکیں فراہم کی ہیں ۔

آب و ہوا کے بحران کے حوالے سے انہوں نے نشاندہی کی کہ امریکہ موسمیاتی بحرانوں کے اثرات سے دوچار ہے ۔ ہم آئندہ پیرس موسمیاتی کانفرنس میں تعمیری تجاویز پیش کریں گے ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles