انتخابی نتائج ، بغداد اور متعدد صوبوں میں مسلسل چوتھے روز احتجاج

بغداد اور کئی عراقی صوبوں میں 10 اکتوبر کو ہونے والے انتخابات کے نتائج کے خلاف مسلسل چوتھے روز بھی مظاہرے جاری ہیں ۔ احتجاجی مظاہرین نے اعلان کیا تھا کہ گرین زون میں داخل ہونے والے دروازوں کے سامنے دھرنا دیں گے جبکہ سیکورٹی فورسز نے گرین زون کے تمام داخلی راستے بند کر دیے ۔

مظاہرین نے گرین زون کے دروازوں پر کئی دھرنے کے خیمے لگائے اور اس بات پر زور دیا کہ ان کا دھرنا تب تک جاری رہے گا جب تک کہ ہائی کمیشن ووٹوں کی گنتی میں ہونے والی سنگین خلاف ورزیوں کو درست نہیں کرتا ۔

عراقی الیکٹورل کمیشن نے اتوار کے روز کہا کہ اپیلوں کی وصولی 3 دن تک جاری رہے گی ۔ پھر ان پر بورڈ آف کمشنر 7 دن تک غور کریں گے اور پھر 10 دن تک ان پر عدلیہ غور کرے گی ۔ اس کے بعد نتائج اپیلوں کا اعلان کیا جائے گا اور پھر جیتنے والے نمائندوں کے ناموں کا اعلان کیا جائے گا ۔

اس سے قبل عراق میں کوآرڈینیشن فریم ورک ، جس میں کئی بلاک شامل ہیں ، نے پارلیمانی انتخابات کے نتائج کو مسترد کرنے کا اعلان کیا اور انتخابی عمل کی ناکامی اور اس کی بد انتظامی کے لیے ہائی الیکشن کمیشن کو ذمہ دار ٹھہرایا ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles