کممجی اور انفیعات ، جینین کب پہنچے؟ صہیونی میڈیا پر بحث

قابض میڈیا کی جانب سے آج صبح ایہم کممجی اور انفیعات کے جنین میں داخلے کے وقت کے بارے میں متنازعہ اطلاعات شائع ہوئیں ۔

عبرانی اخبار ہاریٹز نے رپورٹ کیا ہے کہ قابض پولیس کے پاس ریکارڈ موجود ہیں جس میں بتایا گیا ہے کہ انفیعات جمعہ 10 ستمبر کو حفاظتی باڑ عبور کرنے میں کامیاب ہوا ۔

اسرائیلی پولیس کے اندازوں کے مطابق ایہم کممجی اس سے پہلے یا بعد میں جنین پہنچے ہوں گے لیکن امکان ہے کہ وہ دو دن بعد پہنچے ۔

قبضہ پولیس کے تخمینے بتاتے ہیں کہ صرف دو دن پہلے انفیعات اور کممجی دوبارہ ملے تھے ۔

کان چینل نے اطلاع دی ہے کہ انفیعات گزشتہ ہفتے جینین کیمپ پہنچے اور شن بیٹ کو اس حوالے سے معلومات تھی ۔

چینل کے مطابق جنین کے مشرقی محلے کی ایک عمارت میں انفیعات کی کممجی سے ملاقات کے بارے میں معلومات ملنے کے بعد یہ آپریشن جینین کیمپ میں واپس آنے کی ان کی کوشش کے خوف سے شروع کرنے کا فیصلہ کیا گیا جہاں بڑی تعداد میں عسکریت پسند موجود ہیں اور اس پر حملہ کرنا قابض فوجیوں کو خطرے میں ڈال دے گا ۔

اس نے اشارہ کیا کہ گزشتہ رات آدھی رات کے بعد ایک بجے سپیشل فورسز کے آپریشن کے آغاز کے ساتھ ، اور فورسز کی نقل و حرکت کے دوران ، اس جگہ کے قریب ایک اور گھر کے بارے میں انٹیلی جنس معلومات موصول ہوئی تھیں اور فورسز کو وہاں جانے کی ہدایت کی گئی تھی۔ جہاں انفیعات اور کممجی کو ایک قیدی کے رشتہ دار کے گھر سے گرفتار کیا گیا تھا ۔

عبرانی والہ ویب سائٹ کے ایک فوجی تجزیہ کار امیر بخبوط نے کہا ہے کہ فوج کو اس بات کی وضاحت دینی چاہیے کہ کس طرح دو خطرناک قیدی اس وقت جینین تک پہنچے جب تمام سیکورٹی سسٹم متحرک تھے ۔”

مزید برآں عبرانی ریڈیو "ریشیٹ بیٹ” نے دعویٰ کیا کہ شن بیٹ کو یہ اطلاع تھی کہ دونوں قیدی ایک ہفتہ قبل جینین کیمپ میں تھے اور وہ گرفتاری کے لیے کیمپ سے نکلنے تک انتظار کرتے رہے ۔

عبرانی اخبار ’’ ہاریٹز ‘‘ کے فوجی نمائندے یانیو کوبوبٹس نے اسرائیلی فوج کے ترجمان کے اس بیان کی تردید کی ہے کہ وہ دو قیدیوں کے ٹھکانے اور جنین میں ان کے داخلے کے وقت کے بارے میں معلومات رکھتا ہے ۔

انہوں نے صہیونی سیکورٹی ذرائع کے حوالے سے کہا کہ جنین میں دو قیدیوں کی موجودگی کے بارے میں معلومات شین بیٹ کو گرفتاری سے کئی گھنٹے پہلے ملی تھی ، کئی دن نہیں ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles