جنرل باقری کی دہشت گرد گروہوں کو وارننگ

آج ایرانی مسلح افواج کے چیف آف جنرل سٹاف میجر جنرل محمد باقری نے عراق میں دہشت گرد گروہوں کو سخت وارننگ جاری کی ۔

میجر جنرل باقری نے کہا ہے کہ عراق اور عراق کے شمالی علاقے ، امریکہ کے باڑے ، صہیونی ادارے اور انقلابی مسلح گروہوں کو اس علاقے میں تربیتی ہیڈ کوارٹر ، ریڈیو اور ٹیلی ویژن نشریاتی مراکز اور کیمپوں کی اجازت نہیں دینی چاہیے ۔

انہوں نے مزید کہا ہے کہ انہوں نے اسلامی جمہوریہ کے کچھ سرحدی علاقوں میں انتشار اور اضطراب پھیلایا لہٰذا ہم اس طرح کی مذموم حرکتوں کو برداشت نہیں کریں گے ۔

میجر جنرل باقری نے نوٹ کیا کہ مسلح افواج ، اسلامی انقلابی گارڈ کور کی ذمہ داری کے تحت ، ان دہشت گرد گروہوں کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے کے لیے کام کرے گی اور یہ کہ گزشتہ دو ہفتوں کے دوران ہونے والی کاروائیاں قانونی اور منطقی حق کی بنیاد پر جاری رہیں گی ۔

میجر جنرل باقری نے وضاحت کی کہ ایران نے عراق کی کردستان علاقائی حکومت اور بغداد میں مرکزی حکومت کو برسوں سے ان دہشت گرد گروہوں کو ختم کرنے اور ایران کے خلاف ان کی سرگرمیوں کو روکنے کے لیے مطلع کیا ہے لیکن یہ بدقسمتی کی بات ہے کہ عراقی حکام نے ایرانی سفارشات پر عمل نہیں کیا اور یہاں سے ایران ان گروہوں کو تباہ کرنے میں پہل کرے گا جب تک وہ ایران کے خلاف اپنی دہشت گردانہ کاروائیاں جاری رکھیں گے ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles