یمنی مسلح افواج کا مارب اور شبوہ میں آپریشن "ربیع النصر” کی کامیابی کا اعلان

یمنی مسلح افواج نے مارب اور شبوہ صوبوں میں آپریشن ربیع النصر کو کامیابی سے نافذ کرنے اور اپنے تمام اہداف کو مکمل طور پر حاصل کرنے میں کامیابی کا اعلان کیا ۔

مسلح افواج کے ترجمان بریگیڈیئر جنرل یحییٰ سریع نے کہا کہ ربیع النصر آپریشن کی وجہ سے صوبہ شبوہ کے عسیلان ، بیحان اور عین اضلاع آزاد ہوئے ۔ اس آپریشن نے عبدیہ اور حریب کے اضلاع کو بھی آزاد کرایا ۔ اس کے علاوہ مارب گورنریٹ میں الجوبا اور جبل مراد کے کچھ حصوں کو بھی آزاد کرایا ۔

انہوں نے نشاندہی کی کہ آپریشن ربیع النصر کے دوران آزاد کیے گئے علاقوں کا کل رقبہ 3،200 مربع کلومیٹر ہے ۔

سعودی اتحادی افواج کی صفوں سے زخمیوں اور اموات کے بارے میں سریع نے کہا کہ آپریشن ربیع النصر کی وجہ سے جارحیت کے سینکڑوں کرائے کے افراد کی ہلاکت ، چوٹ اور گرفتاری ہوئی جن میں نام نہاد القاعدہ اور داعش کے ارکان بھی شامل ہیں ۔ اس کے علاوہ بھاری مقدار میں اسلحہ بھی ضبط کیا گیا ہے ۔

سریع نے یمنی مسلح افواج کی جانب سے مارب اور شبوہ کے قبائل کے قابل احترام کردار اور دونوں گورنریٹ کے لوگوں کے اپنے وطن اور قابضین کے خلاف لوگوں کے ذمہ دارانہ موقف کو سلام پیش کیا ۔

انہوں نے نشاندہی کی کہ مسلح افواج شہر مارب میں کرائے کے فوجیوں اور ایجنٹوں سے مطالبہ کر رہی ہیں کہ وہ آنے والے عرصے کے دوران اپنی صورت حال سے نمٹنے کے لیے حملہ آوروں اور قابضین کی صفوں کو چھوڑ دیں ۔

سریع نے اس بات پر زور دیا کہ یمنی مسلح افواج جارحیت کے بند ہونے اور محاصرہے کے خاتمے تک اپنا جہادی فریضہ انجام دیتے رہیں گے ۔

https://player.vimeo.com/video/634432588
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles