عراقی الیکشن کمیشن نے انتخابی نتائج کا اعلان کر دیا

الیکشن کمیشن نے دستی اور مشینی گنتی کا عمل مکمل ہونے کے بعد انتخابات کے نتائج کا اعلان کر دیا ۔

الیکشن کمیشن کے سربراہ جج جلیل عدنان نے پریس کانفرنس میں کہا کہ انتخابی نتائج کی جانچ پڑتال کا عمل مکمل ہو چکا ہے ۔ ہاتھوں اور مشین دونوں سے ووٹوں کی گتنی مکمل ہو چکی ہے ۔

انہوں نے کہا کہ ابتدائی نتائج اب ہائی الیکٹورل کمیشن کی ویب سائٹ پر شائع کر دیئے گئے ہیں ۔ حالیہ نتائج ابتدائی ہیں اور ان کے خلاف اپیل کی جا سکتی ہے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم قانون کے مطابق تمام امیدواروں سے یکساں فاصلے پر کھڑے ہونے کے پابند ہیں اور یہ کہ پارلیمانی انتخابات میں حصہ لینے کی شرح 43 فیصد ہے ۔

کمیشن کے شکایات کے محکمے نے پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ انتخابی نتائج کے خلاف اپیلیں وصول کرنے کے لیے کئی دروازے کھولے گئے اور تمام اپیلوں کی جانچ پڑتال کی جائے گی ۔

انہوں نے مزید کہا کہ انتخابی نتائج کے اعلان کے 3 دن کے اندر اپیلیں موصول ہو جائیں گی ۔

پارلمانی انتخابات کے نتائج کے اعلان کے بعد کسی بھی ہنگامی صورت حال سے نمٹنے کے لئے بغداد میں سکورٹی فورسز کو ہائی الرٹ کر دیا گیا ہے ۔

کمیشن کی ویب سائٹ پر اعلان کردہ اعداد و شمار کے مطابق سیاسی بلاکس کے نتائج درج ذیل تھے:

صدری تحریک: 73 نشستیں
الحلبوسی کی قیادت میں تقدم بلاک: 37 نشستیں
دولۃ القانون: 34 نشستیں
کردستان ڈیموکریٹک پارٹی: 32 نشستیں
الفتح الائنس: 17 نشستیں
کردستان اتحاد: 16 نشستیں
عزم اتحاد: 12 نشستیں
امتداد اتحاد: 9 نشستیں
نئی نسل اتحاد: 9 نشستیں
اشراکہ کانون : 6 نشستیں
العقد الوطنی: 5 نشستیں
تصمیم: 5 نشستیں
قوی الدولہ : 4 نشستیں
النہج الوطنی: 1 نشست

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles