آزادی ٹنل کے قیدی اگلے تبادلہ ڈیل میں سب سے پہلے ہیں ، حماس کا وعدہ

حماس کے سیاسی بیورو کے ایک رکن خلیل الحیا نے تصدیق کی ہے کہ وہ چھ ہیرو جنہوں نے خود کو اسرائیلی جلبوع جیل سے آزاد کرایا وہ اگلے قیدی تبادلے کے معاہدے کے سربراہ ہوں گے اور ہم ان سے کیے گئے اپنے وعدے پر قائم رہیں گے ۔

آج قیدیوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کرتے ہوئے جمعہ کے خطبہ کے دوران غزہ میں ریڈ کراس ہیڈ کوارٹر کے سامنے الحیا نے کہا کہ حماس اپنی پوری طاقت سے قیدیوں کو ہر طرح سے آزاد کرانے کی کوشش کر رہا ہے ۔ ہم صبح اور شام ملاقاتیں جاری رکھے ہوئے ہیں اور ہم اپنی مزاحمت کے ساتھ قیدیوں کو جیلوں سے آزاد کرانے اور ان کو سفید کرنے کے منصوبے بناتے ہیں تاکہ آپ جلد ہی ہمارے رہنماؤں ، کارکنوں اور مجاہدین میں شامل ہوں ۔

الحیا نے اس بات پر زور دیا کہ فلسطینی عوام ان تمام لوگوں کا تعاقب کریں گے جو چھ ہیروز کی دوبارہ گرفتاری کے دوران اور جیلوں میں اسیر تحریک کے رہنماؤں کے تابع تھے ۔ انہوں نے کہا ہے کہ آج ہم اپنے ہیروز کے ساتھ جیلوں میں قیدیوں کی حمایت میں کھڑے ہیں کیونکہ وہ قبضے کے باوجود ہماری قوم اور آزاد لوگوں کی نمائندگی کرتے ہیں ۔

حماس کے رہنما نے "فریڈم ٹنل” آپریشن کو ان تمام لوگوں کے لیے ایک طمانچہ قرار دیا جو آبادکاری کے راستوں پر شرط لگاتے ہیں اور قبضے کے ساتھ شرط لگاتے ہیں ۔ یہ قبضے سے لڑنے کے لیے کاروائیوں کا حصہ ہے ۔

انہوں نے کہا ہے کہ چھ ہیرو اگلے معاہدے میں سرفہرست ہوں گے اور یہ صرف ایک اعلان نہیں ہے ۔ یہ ہماری مزاحمت اور ہماری تحریک کی طرف سے جاری کردہ فیصلہ ہے اور ہم اپنے وعدے پر قائم رہیں گے ۔

الحیا نے زور دیا کہ قیدیوں کا مسئلہ سرخ لکیر ہے اور ان کے خلاف کسی بھی جارحیت کو برداشت نہیں کیا جا سکتا ۔ انہوں نے جینین کیمپ کے لوگوں اور ان کی سمارٹ موومنٹ کو سلام پیش کیا جو کہ قبضے کے خلاف مشترکہ آپریشن روم کی تشکیل میں ظاہر ہوا ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles