قابض ادارے کے ساتھ روابط کے خلاف بحرینی عوام سراپا احتجاج

بحرین میں اسرائیلی قابض ادارے کے ساتھ معمول پر آنے کے خلاف احتجاج جاری ہے ۔ بحرینیوں نے کل رات سنابس کے علاقے میں مظاہرہ کیا اور نارملائزیشن کی مذمت کرتے ہوئے نعرے بلند کیے جیسا کہ "اسلامی بحرین میں صہیونی سفارت خانہ نامنظور” اور "بحرین کے عوام معمول کو مسترد کرتے ہیں” ۔

واضح رہے کہ 30 ستمبر کو اسرائیلی وزیر خارجہ یائر لاپڈ نے بحرین کا دورہ کیا جو کسی بھی اسرائیلی وزیر کے پہلے سرکاری دورہ تھا ۔ اس دوران بحرین میں اسرائیلی سفارت خانہ کھولا گیا ۔

بحرین کے بادشاہ حماد بن عیسیٰ الخلیفہ نے اپنے ملک کے قبضے والے ادارے کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے کو "تاریخی کامیابی” قرار دیا ۔

بحرین کی اپوزیشن جماعتیں اور انجمنیں اور 14 فروری کے انقلاب سے پیدا ہونے والے دھاروں نے تل ابیب کے ساتھ بحرینی حکومت کو معمول پر لانے کو مسترد کر دیا ۔ انہوں نے فلسطینی کاز کے ساتھ اس کی وابستگی پر زور دیا اور بحرین اور اس کے عوام کو حکومت کے اقدامات سے لاتعلق ہونے پر زور دیا ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles