قیدیوں کے ساتھ اظہار یکجہتی ، غزہ میں ریڈ کراس ہیڈ کوارٹر کے سامنے نماز جمعہ کی ادائیگی

غزہ کی پٹی میں درجنوں فلسطینیوں نے اسرائیلی جیلوں میں کھلی بھوک ہڑتال کرنے والے قیدیوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لیے ریڈ کراس کی بین الاقوامی کمیٹی کے ہیڈ کوارٹر کے سامنے نماز جمعہ ادا کی ۔

تحریک کے رہنما داؤد شہاب نے نماز کے دوران جمعہ کا خطبہ دیا جس کا انعقاد جہاد اسلامی تحریک نے کیا تھا ۔ شہاب نے خطبہ کے دوران کہا کہ قیدیوں کی رہائی کے لیے مزاحمت کے لیے تمام آپشن ، طریقے اور ذرائع دستیاب ہیں ۔مزاحمت قیدیوں کی آزادی کے لیے قبضے کے ساتھ محاذ آرائی کے لیے تیار ہے ۔ انہوں نے قبضے کی جیلوں کے اندر تمام قیدیوں کو سلام کیا ، خاص طور پر سیلوں میں الگ تھلگ قیدیوں کو ۔

انہوں نے کہا کہ پچھلے دو دنوں کے دوران جہاد اسلامی تحریک نے پرسکون حالت کو برقرار رکھنے سے متعلقہ تمام فریقوں کے ساتھ بات چیت کی ۔ ثالثوں نے ہمیں بتایا کہ ہڑتال کو طول دینے سے قیدیوں کی زندگیوں کو شدید خطرات لاحق ہوں گے اور یہی وہ چیز ہے جس تک ہم انہیں رسائی کی اجازت نہیں دیں گے ۔

جمعرات کو اسلامی مزاحمتی تحریک "حماس” اور جہاد اسلامی کی قیادت کی ملاقات کے بارے میں شہاب نے کہا کہ گذشتہ روز ایک طویل ملاقات جہاد اسلامی کے سیکرٹری جنرل زیاد النخالہ اور حماس کے ڈپٹی لیڈر صالح العاروری کی موجودگی میں ہوئی جس کے دوران انہوں نے قیدیوں کے مسئلے سمیت قومی معاملات سے متعلق ہر چیز پر بات چیت کی ۔

انہوں نے وضاحت کی کہ دونوں تحریکوں نے ان تمام اقدامات اور طریقہ کار پر اتفاق کیا ہے جو قبضے کی جیلوں میں قیدیوں کی مدد اور مدد کے لیے کیے جائیں گے ۔

واضح رہے کہ گذشتہ روز حماس اور جہاد اسلامی نے اسرائیل کو اس کی جیلوں کے اندر (فلسطینی) قیدیوں کو نقصان پہنچانے سے خبردار کیا ۔

دونوں تحریکوں کے رہنماؤں کے درمیان ملاقات کے بعد جاری کردہ ایک پریس بیان میں کہا کہ یہ خطے کو ایک وسیع دھماکے کی طرف لے جائے گا ۔

یاد رہے کہ بدھ کے روز اسرائیلی جیلوں میں زیر حراست 250 اسلامی جہادیوں نے ان کے خلاف "مکروہ ، غیر انسانی اور غیر قانونی اقدامات” کی مخالفت میں کھلی ہوئی بھوک ہڑتال شروع کی ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles