قندہار ، فاطمیہ مسجد بم دھماکے میں شہداء کی تعداد 20 ہو گئی

افغانستان کے جنوبی شہر قندھار میں ایک مسجد کو نشانہ بنانے والے خودکش بم دھماکے میں شہید والوں کی تعداد بڑھ کر 20 ہو گئی ہے جبکہ زخمیوں کی تعداد 40 تک جا پہنچی ہے جبکہ شہادتوں کی تعداد میں اضافے کا بھی خدشہ ہے ۔

افغان وزارت داخلہ کے ترجمان نے بتایا کہ جمعہ کی نماز کے دوران ایک بڑے دھماکے نے قندھار میں ایک مسجد کو نشانہ بنایا جس کی وجہ سے بڑی تعداد میں جانی نقصان ہوا ۔

طالبان کے ایک عہدیدار نے بتایا کہ گزشتہ ہفتے شمال مشرقی افغان شہر قندوز میں ایک فقہ جعفریہ کی ایک مسجد پر خودکش حملے میں کم از کم 55 افراد شہید ہوئے تھے ۔ امریکی افواج کے ملک چھوڑنے کے بعد سے یہ مہلک ترین حملہ تھا۔

یاد رہے کہ گزشتہ جمعہ کے روز شمال مشرقی افغان شہر قندوز میں فقہ جعفریہ کی ایک مسجد پر خودکش حملے میں کم از کم 55 افراد شہید ہوئے تھے ۔ امریکی افواج کے ملک چھوڑنے کے بعد سے یہ مہلک ترین حملہ تھا ۔ ایک طالبان عہدیدار نے بتایا کہ خونی دھماکہ ، ایک خودکش حملہ تھا ۔ ان کے بیان کے فورا بعد اسلامک اسٹیٹ-خراسان نے اس حملے کی ذمہ داری قبول کی ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles