این ہیڈلگو ، فرانسیسی صدارتی انتخابات میں سوشلسٹ پارٹی کی قیادت کریں گی

پیرس کی میئر این ہیڈلگو نے 2022 میں فرانسیسی صدارتی انتخابات میں حصہ لینے کے لیے جمعرات کی شام سوشلسٹ پارٹی کی نامزدگی جیت لی ۔ ایسے وقت میں جب پولز سے پتہ چلتا ہے کہ وہ صدارتی انتخابات کے پہلے مرحلے میں ووٹنگ میں صرف چار سے سات فیصد کے درمیان ووٹ حاصل کریں گی ۔

پول کے مطابق جن میں 90 فیصد سے زیادہ ووٹوں کی گنتی کی گئی ہے ، ہیڈلگو ، جو بڑے پیمانے پر سوشلسٹ پارٹی کی نامزدگی کے لیے سب سے آگے سمجھا جاتا تھا ، نے اس کاکس میں 72 فیصد سے زیادہ ووٹ اپنے واحد چیلنج ، سابق وزیر زراعت اسٹیفن کے خلاف حاصل کیے ۔ لی فول نے سوشلسٹ پارٹی کے پہلے سیکرٹری اولیور فیور کا اعلان کیا ۔

62 سالہ سپین سے آنے والے تارکین وطن کی بیٹی ہے ۔ اگر وہ فرانس کی پہلی خاتون صدر بننا چاہتی ہے تو اسے قومی سطح پر اپنی طاقت کو بڑھانا ہوگا ۔

ہیڈلگو 2014 میں فرانس کے دارالحکومت کو چلانے والی پہلی خاتون بنی اور چند ایماندار بائیں بازو کے سیاستدانوں میں شامل ہیں جو صدر ایمانوئل میکرون کے 2017 کے سیاسی منظر نامے کی نسبتا غیر محفوظ شدہ تصویر سے ابھر کر سامنے آئیں ۔ اپریل کے پہلے راؤنڈ میں تقریبا 8 8 فیصد رائے دہندگان کی حمایت حاصل ہے ۔ تاہم وہ ایک سرسبز معیشت ، پرانے مینوفیکچرنگ ہارٹ لینڈس میں دوبارہ انڈسٹریلائزیشن ، شہریوں کو یورپی یونین کے سامنے اور مرکز میں رکھنے اور تعلیم کو بہتر بنانے کا وعدہ کرتی ہے لیکن ابھی تک ان معاملات میں کوئی خاص کامیابی حاصل نہیں ہوئی ہے ۔

پیرس کے میئر کی حیثیت سے انہوں نے کوویڈ 19 کے بحران کے دوران آلودگی پھیلانے والی گاڑیوں پر سختی کرنے اور نئی موٹر سائیکل لین بنانے کے لیے ، دریائے سین کے ایک بار ٹریفک سے متاثرہ کناروں کو ہلچل مچانے والی جگہوں میں تبدیل کرنے پر ان کی تعریف کی گئی ہے ۔

یاد رہے کہ ہیڈلگو 2014 سے پیرس کی میئر ہے ۔ وہ جنوبی اسپین کے اندلس میں پیدا ہوئی ، دو سال کی عمر میں اپنے والدین کے ساتھ فرانس ہجرت کی اور 14 سال کی عمر میں فرانسیسی شہریت حاصل کی ۔

ہیڈلگو کے علاوہ امیدواروں کا ایک بڑھتا ہوا ہجوم میدان میں ہے جو اگلے سال انتخابات میں میکرون کو صدارت کے لیے چیلنج کرنے کے لیے کوشاں ہیں ، ۔

یاد رہے کہ فرانسیسی صدر ایمانوئل میکرون اگلے سال کے انتخابات جیتنے کے لیے پسندیدہ ہیں لیکن وہ خود کو اس بات سے ناخوشگوار پوزیشن میں پاتے ہیں کہ انتخابات سے چھ ماہ قبل ان کا اصل حریف کون ہے ۔ اگر 2017 میں فرانسیسی کم عمر ترین صدر بننے کے لیے ریکارڈ سی رفتار سے سیاسی سیڑھی چڑھنے والے میکرون جیت جاتے ہیں تو وہ جیک شیراک کے دور کے بعد دوسری مدت کے لیے منتخب ہونے والے پہلے صدر ہوں گے جیسا کہ ان کے پیشرو نکولس سرکوزی اور فرانسوا اولاند نے صرف ایک مدت کے لیے حکومت کی ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles