جاپانی وزیراعظم نے پارلیمنٹ تحلیل کر دی

جاپان کے نئے وزیر اعظم فومیو کشیدا نے اکتوبر کے آخر میں عام انتخابات کی تیاری کے لیے ایوان نمائندگان کو تحلیل کرنے کا اعلان کیا ہے ۔ جبکہ وہ گذشتہ ہفتے شروع ہونے والی اپنی حکومت کے لیے بھاری مینڈیٹ کے خواہاں ہیں ۔

جاپانی خبر رساں ایجنسی "کیوڈو” نے کہا ہے کہ 21 اکتوبر کو ایوان نمائندگان کی چار سالہ مدت ختم ہونے کے بعد 31 اکتوبر کو عام انتخابات کرانے کی یقین دہانی کرائی ہے ۔

واضح رہے کہ جاپان کی تاریخ میں یہ پہلا موقع ہے کہ پارلیمنٹ کی مدت ختم ہونے کے بعد عام انتخابات کا شیڈول کیا گیا ہے ۔ یہ ایوان نمائندگان کی تحلیل اور پولنگ کے دن کے درمیان مختصر ترین مدت بھی ہوگی ۔

نو منتخب جاپانی وزیر اعظم کیشیڈا نے 29 ستمبر کو حکمران ایل ڈی پی کے صدارتی انتخابات میں کامیابی حاصل کی اور 4 اکتوبر کو ایل ڈی پی کی قیادت والے اتحاد کی غلبہ والی پارلیمنٹ میں وزیر اعظم منتخب ہوئے ۔

یاد رہے کہ سابق وزیر اعظم یوشی ہیڈے سُوگا نے اقتدار سنبھالنے کے دو سال بعد گزشتہ ماہ ہی استعفیٰ دے دیا تھا جس کے بعد پارٹی اور حکومتی سربراہ کے طور پر 64 سالہ فُومیو کِیشِیدا کا انتخاب کیا گیا ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles