تیونس کے صدر نے نئی حکومت سازی کے حکم نامے پر دستخط کر دیئے

آج تیونس کے صدر قیس سعید نے صدارتی حکم نامے پر دستخط کیے ہیں جس میں ملک میں نئی تیونسی حکومت کے نام بتائے جس کی سربراہی نجلا بودن کر رہی ہیں جنہیں کچھ دن پہلے حکومت بنانے کا کام سونپا گیا تھا ۔

تیونس کے صدر نے آج صبح نامزد وزیر اعظم سے ملاقات کی اور صدارتی حکم نامے پر دستخط کیے جس میں حکومت کے سربراہ اور اس کے ارکان کا نام شامل تھے ۔

سعید نے بودن کو گذشتہ ستمبر کے آخر میں نئی حکومت بنانے کا حکم دیا تھا ، تقریبا دو ماہ کی غیر موجودگی کے بعد حکومت نے اپنے سابق صدر ہشام المشیشی کو 25 جولائی کو برطرف کر دیا تھا ۔

سعید نے ملک میں کئی مہینوں سے جاری سیاسی بحران کی روشنی میں 25 جولائی کو تیونس کے ایوان نمائندگان کو منجمد کرنے کے لیے غیرمعمولی فیصلے کیے جو النہضہ تحریک کے زیر کنٹرول ہے اور المشیشی کو ان کے عہدے سے برخاست کر دیا ۔

حکومت بنانے کی ذمہ داری سونپنے کے بعد بودن نے اس بات کی تصدیق کی تھی کہ وہ اپنی حکومت میں نوجوان اور خواتین کی صلاحیتوں کو استعمال کرے گی اور یہ کہ وہ ملک میں معاشی اور صحت کے حالات کو حل کرنے اور زندگی کو بہتر بنانے کے لیے اپنی ترجیحات میں سرفہرست ہوگی ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles