عراق میں آج عام انتخابات جاری

آج اتوار کی صبح سے ہی عراقی ووٹرز نے ابتدائی قانون سازی کے انتخابات میں اپنا ووٹ ڈالنا شروع کیا ۔

آزاد ہائی الیکشن کمیشن کے اعلان کے مطابق پولنگ سٹیشنوں نے تقریبا 25 ملین اہل ووٹروں کے لیے اپنے دروازے کھول دیے ۔ ووٹنگ کا عمل شام 6 بجے تک بلاتعطل جاری رہے گا ۔

انتخابات بین الاقوامی اور بین الاقوامی نگرانی کے تحت منعقد ہو رہے ہیں اور یہ نئے انتخابی قانون کے تحت پہلے انتخابات ہیں جس نے ملک کو تہتر انتخابی اضلاع میں تقسیم کیا ۔

ملک میں انتخابی عمل کو محفوظ بنانے کے لیے سپریم سیکورٹی کمیٹی نے کل شام 9 بجے ہوائی اڈے اور زمینی بندرگاہیں بند کرنے کا اعلان کیا تھا ۔

گورنریٹس کے درمیان اہم رکاوٹیں صبح ایک بجے بند کر دی گئیں اور دو ٹن سے بڑی گاڑیوں ، موٹر سائیکلوں اور ٹرینوں کی نقل و حرکت بھی بند ہے ۔ کمیٹی نے تصدیق کی کہ شہروں کے اندر کوئی کرفیو نہیں ہے ۔

عراقی ہائی الیکشن کمیشن نے اعلان کیا کہ جمعہ کو پہلے دن پارلیمانی انتخابات میں خصوصی بیلٹ میں شرکت کی شرح 69 فیصد ہے ۔ خصوصی ووٹ میں سیکورٹی سروسز ، بے گھر اور قیدیوں کے تقریبا 1.2 ملین ووٹر شامل تھے ۔

عراقی وزیر اعظم مصطفیٰ الکاظمی نے آج صبح انتخابات میں اپنا ووٹ کاسٹ کرتے ہوئے کہا کہ حکومت قبل از وقت انتخابات مکمل کرنے میں کامیاب ہوئی ، انتخابات میں وسیع پیمانے پر شرکت کا مطالبہ کیا ۔

یاد رہے کہ آیت اللہ سید علی سیستانی نے ایک بیان میں سبھی لوگوں سے ذمہ داری و ہوشیاری کے ساتھ انتخابات میں شامل ہونے کی اپیل کے ساتھ ہی کہا ہے کہ یہ انتخابات حالانکہ نقص سے خالی نہیں ہیں لیکن ملک کو ایسے مستقبل کی طرف لے جانے والا سب سے پر امن راستہ ہیں جو ماضی سے بہتر ہوگا اور ملک کو سیاسی تعطل سے بچائے گا ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles