اسرائیلی قبضے نے سلوان میں الراجبی خاندان کی عمارت کو منہدم کر کے وہاں کے رہائشیوں کو بے گھر کر دیا ۔

آج منگل کی دوپہر اسرائیلی قابض بلڈوزروں نے مقبوضہ بیت المقدس کے علاقے سلوان میں رجبی خاندان کی ایک رہائشی عمارت کو منہدم کردیا۔
اسرائیلی قبضے کے طریقہ کار نے الرجبی خاندان کے گھر کو مسمار کرنا شروع کر دیا، جو مسجد اقصیٰ کے جنوب میں واقع سلوان قصبے کے عین اللوزا محلے میں دو منزلوں پر پھیلے پانچ اپارٹمنٹس پر مشتمل ہے، اور اس میں تیس سے زائد افراد رہائش پذیر ہیں۔ جن میں بچے ہیں۔
قابض پولیس نے مکان کے آس پاس موجود رہائشیوں اور پریس کے عملے پر حملہ کیا اور انہدام کی کوریج میں صحافیوں کے کام میں رکاوٹیں ڈالیں۔
اسرائیلی قابض میونسپلٹی نے "کچھ دن پہلے رجبی خاندان کو مطلع کیا تھا کہ ان کے پاس اجازت نامہ نہ ہونے کے بہانے ان کی عمارت کو گرا دیا جائے گا۔”
ایک متعلقہ تناظر میں، درجنوں آباد کاروں نے آج صبح، اسرائیلی قابض افواج کی سخت حفاظت میں، مغربی گیٹ کے اطراف سے مسجد اقصیٰ کے صحنوں پر دھاوا بول دیا۔
اور یروشلم میں محکمہ اوقاف نے اطلاع دی ہے کہ "درجنوں آباد کاروں نے صبح کے وقت مسجد اقصیٰ کے صحنوں پر دھاوا بول دیا، اور اس کے چوکوں میں اشتعال انگیز دوروں کا اہتمام کیا۔”

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles