چھ قیدیوں کا فرار ، قابض فوج حواس باختہ ، جینین میں چھاپے و گرفتاریاں

آج اسرائیلی قابض افواج نے جنین گورنریٹ میں بڑے پیمانے پر چھاپے مارے ۔ ایک نوجوان کو گولی مار کر زخمی کر دیا اور چھ شہریوں کو گرفتار کیا جن میں جلبوع جیل سے فرار چھ قیدیوں کے رشتہ دار بھی شامل ہیں ۔ غاصب فوج نے گاڑیوں کا ایک گیراج بھی مسمار کر دیا ۔

اس کے نتیجے میں جینین کے مغرب میں انین گاؤں میں قابض فوج کے ساتھ جھڑپیں شروع ہوئیں جس کے نتیجے میں متعدد شہریوں کا آنسو گیس سے دم گھٹ گیا ۔

قابض افواج کے ساتھ تصادم کے دوران اربعہ کے شہید ابو جہاد سکول کے ایک طالب علم کے سر پر گولی لگی ۔ غاصب فوج نے سکول اور آس پاس کے مکانات پر زندہ گولیاں اور آنسو گیس کے ڈبے فائر کیے جبکہ درجنوں طلباء کا دم گھٹ گیا ۔

اس تناظر میں قبضے کے بلڈوزروں نے گاؤں انین میں گاڑیوں کا ایک گیراج مسمار کر دیا ۔ رنگ برنگی دیوار کے قریب زیتون کے درختوں اور کھیتوں کو اجاڑ دیا ۔

قابض افواج نے چھ شہریوں کو گرفتار کیا جن میں جلبوع جیل سے فرار چھ قیدیوں کے رشتہ دار بھی شامل ہیں جنہیں اربع اور یاباد کے قصبوں میں چھاپوں اور تلاشی کے دوران گرفتار کیا گیا ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles