طالبان نے اپنی حکومت کا اعلان کر دیا

طالبان نے افغانستان میں عبوری حکومت تشکیل دیتے ہوئے کابینہ کے ناموں کا اعلان کردیا، اسلامی حکومت کے قائم مقام سربراہ محمد حسن اخوند جب کہ ملا عبدالغنی برادر اور ملا عبدالسلام ان کے نائب ہوں گے ۔

مجاہد نے کہا کہ امیر خان متقی کو قائم مقام وزیر خارجہ ، عباس اسٹیکن زئی کو قائم مقام نائب وزیر خارجہ اور سراج الدین حقانی کو قائم مقام وزیر داخلہ کے طور پر تعینات کیا جبکہ طالبان کے مرحوم بانی ملا محمد عمر کے بیٹے ملا یعقوب مجاہد قائم مقام وزیر دفاع کا عہدہ سنبھالیں گے ۔

مجاہد نے عبدالحق وثیق کو قائم مقام چیف انٹیلی جنس ، محمد ادریس کو مرکزی بینک کا سربراہ اور مولوی فصیح الدین کو قائم مقام آرمی کمانڈر مقرر کرنے کا اعلان کیا جبکہ ہدایت اللہ بدری وزیر خزانہ اور شیخ اللہ منیر کا نگران حکومت میں وزیر تعلیم کا قلمدان سنبھالیں گے ۔

تحریک کے ترجمان نے کہا ہے کہ یہ تشکیل عارضی ہے اور مستقل نہیں ۔ انہوں نے کہا کہ مستقبل میں دیگر وزارتوں کا اعلان کیا جائے گا ۔ ہم نے ابھی ان وزارتوں کا اعلان کیا ہے جن کی ہمیں سب سے زیادہ ضرورت ہے ۔ انشاء اللہ ہم مستقبل میں باقی وزارتوں کا اعلان کریں گے ۔”

مجاہد نے کہا کہ تحریک چاہتی ہے کہ افغان معاشرے کے تمام طبقات اگلی حکومت میں اپنا کردار ادا کریں ۔ ملک سے باہر لوگ کابل میں انتشار کے خواہاں ہیں اور مظاہروں کے پیچھے غیر ملکی جماعتیں ہیں ۔ نئی حکومت افغانستان میں انتشار کی اجازت نہیں دے گی ۔

مجاہد نے اعلان کیا کہ طالبان امریکہ کے ساتھ اچھے تعلقات قائم کرنا چاہتے ہیں ۔ ہم دنیا سے بھی توقع کرتے ہیں کہ وہ افغانستان کے ساتھ دشمنی کا خاتمہ کرے گا اور افغان عوام کے لیے مدد کا ہاتھ بڑھائے گا ۔

حکومتی وزراء درج ذیل ہیں ۔

قائم مقام وزیراعظم: ملا محمد حسن اخوند
پہلا نائب وزیراعظم: ملا برادر آخوند۔
دوسرا نائب وزیر اعظم: مولوی عبدالسلام حنفی
قائم مقام وزیر دفاع: ملا محمد یعقوب مجاہد
قائم مقام وزیر خارجہ: عامر خان متقی۔
قائم مقام وزیر داخلہ: ملا سراج الدین حقانی
قائم مقام وزیر خزانہ: ملا ہدایت اللہ بدری۔
قائم مقام وزیر ثقافت و اطلاعات: ملا خیراللہ خیرخواہ
قائم مقام وزیر معیشت: قاری دین محمد حنیف۔
قائم مقام وزیر انصاف: مولوی عبدالحکیم شرعی
قائم مقام وزیر قبائل و سرحدیں: نور اللہ نوری
گاؤں کی توسیع کے قائم مقام وزیر: یونس اخوندزادہ
قائم مقام وزیر برائے عوامی فائدے: ملا عبدالمنان عمری
قائم مقام وزیر معدنیات اور پٹرولیم: ملا محمد عیسیٰ آخوند۔
قائم مقام وزیر پانی و بجلی: ملا عبداللطیف منصور۔
وزیر اعلیٰ تعلیم: عبدالباقی حقانی
قائم مقام وزیر انٹیلی جنس: نجیب اللہ حقانی
قائم مقام وزیر برائے مہاجرین امور: خلیل رحمان حقانی
جنرل انٹیلی جنس ایوان صدر کے قائم مقام سربراہ: ملا عبدالحق وثیق۔
قائم مقام مرکزی بینک کے صدر: حاجی محمد ادریس۔
انتظامی امور کے قائم مقام چیف: احمد جان احمدی
وزارت دفاع کے انڈر سیکرٹری: ملا محمد فاضل مظلوم
چیف آف سٹاف: قاری فصیح الدین
وزارت خارجہ کے انڈر سیکرٹری: شیر محمد عباس ستانکزی
وزارت داخلہ کے انڈر سیکرٹری: مولوی نور جلال
وزارت ثقافت و اطلاعات کے انڈر سیکرٹری: ذبیح اللہ مجاہد
انٹیلی جنس کی پہلی ڈپٹی جنرل صدارت: ملا تاج میر جواد
جنرل پریذیڈنسی آف انٹیلی جنس کے انتظامی نائب: ملا رحمت اللہ نجیب
منشیات کے کنٹرول کے لیے وزارت داخلہ کے انڈر سیکرٹری: ملا عبدالحق آخند

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles