مزید انخلا کے بارے میں طالبان سے بات کرنا چاہتے ہیں ، مرکل

جرمن چانسلر انجیلا مرکل نے کہا ہے کہ جرمنی افغانستان میں برسر اقتدار طالبان سے بات کرنا چاہتا ہے کہ ان مقامی ٹھیکیداروں کو کیسے نکالا جائے جو جرمنی کے ساتھ کام کر چکے ہیں اور اب بھی وہاں موجود ہیں ۔

مرکل نے ایک پریس بیان میں کہا کہ یہ حوصلہ افزا ہے کہ انخلا کی پروازوں کے لیے کابل ہوائی اڈے کو دوبارہ استعمال کرنا ممکن ہو گیا ہے ۔

اس نے اعلان کیا کہ یونین کابل میں نئی طالبان حکومت سے نمٹنے کے لیے تیار ہے لیکن تحریک کو انسانی حقوق بشمول خواتین کے حقوق کا احترام کرنا چاہیے اور افغانستان کو دہشت گردی کے اڈے میں تبدیل نہیں ہونے دینا چاہیے ۔

میرکل نے مزید کہا ہے کہ ہم طالبان سے بات کرنا چاہتے ہیں کہ جرمنی کے ساتھ کام کرنے والے شہریوں کو ملک سے باہر محفوظ علاقوں میں کیسے منتقل کیا جائے ۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ بین الاقوامی امدادی تنظیموں کو بھی وہاں انسانی صورتحال کو بہتر بنانے کے لیے کام کرنا چاہیے ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles