یروشلم کے باب العامود اسکوائر پر فلسطینی نوجوانوں اور قابض فوج کے درمیان پرتشدد تصادم

منگل کی شام، مقبوضہ بیت المقدس کے باب العامود اسکوائر میں نوجوانوں اور "اسرائیلی” قابض افواج کے درمیان پرتشدد تصادم شروع ہوا۔
عینی شاہدین نے بتایا کہ باب العمود اسکوائر میں پرتشدد تصادم شروع ہوا جس کے دوران قابض فورسز نے نوجوانوں پر آنسو گیس کے گولے داغے اور قابض فوج نے باب العمود اسکوائر میں شروع ہونے والی جھڑپوں کے دوران ایک نوجوان لڑکے کو گرفتار کر لیا۔
مقامی ذرائع نے بتایا کہ قابض فوج نے فلسطینیوں کو مارا پیٹا اور دھکیل دیا، قریبی وادی الجوز کے علاقے میں ان کا تعاقب کیا اور جوانوں پر ربڑ کی لیپت دھاتی گولیاں برسائیں، جس میں کوئی زخمی نہیں ہوا۔
باب العمود میں دو روز قبل بھی اسی طرح کے تصادم کا مشاہدہ کیا گیا تھا، جس میں 20 سے زائد شہری زخمی ہوئے تھے۔
صہیونی حلقوں کو خدشہ ہے کہ مقبوضہ بیت المقدس میں باب العمود کے مقام پر محاذ آرائی ایک بڑی کشیدگی کی شکل اختیار کر لے گی جو غزہ کی پٹی سمیت فلسطینی علاقوں کو بڑے پیمانے پر جنگ میں گھسیٹ سکتی ہے۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles