شاہ سلمان کو پاکستان سمیت 29 ممالک کے نئے سفرا نے اسناد سفارت پیش کیں

پاکستان متعدد ممالک کے سفرا نے وڈیو رابطے کے ذریعے شاہ سلمان بن عبدالعزیز کو اپنی اسناد سفارت پیش کی ہیں ۔ اس موقع پر سعودی وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان کی موجودگی میں نئے سفرا کو خصوصی پروٹوکول دیا گیا ۔

اسناد سفارت پیش کرنے والوں میں پاکستان کے سفیر بلال اکبر ، قطر کے بندر محمد عبداللہ عطیہ ، عراق کے عبدالستار ھادی عبید الجنابی ، ترکی کے فاتح اولوصوئے اور سینیگال کے ماما دومامودو صال شامل ہیں ۔ اس کے علاوہ بیلاروس کے سفیر آندرے لوچینوک ، انگولا کے سفیر فریڈریکو کارڈوسو ، ایتھوپیا کے سفیر لنچو بیٹ ، نائجیریا کے سفیر یحییٰ لوال شامل ہیں ۔

جمہوریہ برونڈی کے سفیر جیک یعقوب ، کوریا کی سفیر پارک جون ینگ ، یوراگوئے کے سفیر نیلسن یمیل شعبان لا بادی ، آسٹریلوی سفیر مارک لارنس ڈونووان ، گھانا کے سفیر محمد حبیبو تیجانی ، گبون کے سفیر ، ابراہیم ممبورو ، جرمنی کے سفیر ڈائٹر لا میلے ، کروشین سفیر ٹامسلاو بوسنک ، کمبوڈین سفیر کھون وون رتنک ،
نیوزی لینڈ کے سفیر بارنبی رچرڈ جیرارڈ ریلی ، صومالیہ کے وفاقی سفیر سلیم ماؤ حاجی ، کانگو کا سفیر سيليستن جون بول اكولافوا ، ٹونگا کی بادشاہی کا سفیر آنوربول اکولا ، گوئٹے مالا کے سفیر لارس پیرا ، پانامانی سفیر ریکارڈو لاویری ، مالڈوواین سفیر وکٹر ہاروٹا ، ناروے کے سفیر تھامس لیڈ بل ، لیسوتھو بادشاہی کا سفیر بومو فرینک سوفونیا ، کیوبا کے سفیر ولادیمیر آندرس گونزالیز کساڈا اور ارجنٹائن کے سفیر گیگر نیلسن نے اپنی اسناد پیش کی ۔

شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے سفرا کو خوش آمدید کہا اور تمام ممالک کے فرمانرواؤں اور قائدین کے لیے خیر سگالی کا پیغام دیا ۔ انہوں نے اس خواہش کا اظہار کیا کہ تمام سفرا برادر اور دوست ملکوں کے ساتھ سعودی عرب کے تعلقات کو مزید بہتر بنانے اور ایک دوسرے کی ترقی و خوشحالی میں تعمیری کردار ادا کریں گے ۔

سفرا نے شاہ سلمان بن عبدالعزیز کو اپنے قائدین کی جانب سے خیر سگالی کے پیغامات پیش کیے اور اس عزم کا اظہار کیا کہ وہ مملکت کے ساتھ اپنے ممالک کے تعلقات مضبوط بنانے کی ہر ممکن کوشش کریں گے ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles