آستان قدس رضوی پر رحلت رسول اسلام (‏‏ص) اور شہادت امام حسن(‏‏ع) کی عزاداری

تمام ایرانی شہروں خاص طور پر مشہد مقدس اور حرم رضوی سمیت دنیا کے گوشہ و کنار میں رسول خدا (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) کی رحلت اور فرزند رسول خدا حضرت امام حسن مجتبی (‏‏ع) کی شہادت کا غم انتہائی عقیدت و احترام کے ساتھ منایا جا رہا ہے ۔ تاہم اس سال کورونا وائرس کی وجہ سے عزاداری کے مراسم طبی اصولوں کے مد نظر منعقد ہو رہے ہیں ۔

ہر سال ہزاروں سنی ، شیعہ زائرین 28 صفر کے دن مشہد شہر میں اس ماتمی تقریب میں جمع ہوتے ہیں جو ایران میں مسلمانوں کے درمیان اتحاد اور بھائی چارے کی انتہائی شاندار تصاویر کو ریکارڈ کرتا ہے ۔

مزار رضوی پر محکمہ زائرین کی خدمات ماتمی تقریبات کی تیاریوں کا ایک سلسلہ منعقد کرتی ہیں جیسا کہ امام رضا علیہ السلام کے مزار کو سیاہ رنگ میں ڈھک دیا گیا ہے اور حرم کے مختلف مقامات پر سیاہ بینر لگائے گئے ہیں جیسا کہ صحن پیغمبر اکرم (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) ۔ اس صحن میں جمعہ اور عید کی نماز کے علاوہ روزانہ کی پانچ جماعتیں اور دیگر ثقافتی اور مذہبی پروگراموں کے انعقاد کیا جاتا ہے ۔

واضح رہے کہ 2020 بمطابق 27 رجب المرجب 1442 ھ "آستانہ رضوی” کے صحن کا نام بدل کر "صحن نبی اعظم” رکھ دیا گیا تھا ۔

یہ تبدیلی امام رضا علیہ السلام کے زائرین کی درخواست پر کی گئی تھی کہ وہ رضوی کے مقدس مزار کے صحنوں میں سے کسی ایک کا نام سردار انبیاء کے نام پر رکھیں ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles