روس کا سپر سونک میزائلوں میں ایک اور کامیاب تجربہ

روسی بحریہ نے پہلی بار ایٹمی آبدوز "سیوروڈونسک” سے ہائپرسونک میزائل "تسیرکون” کا تجربہ کیا ہے ۔ روسی وزارت دفاع نے اعلان کیا ہے کہ ایٹمی آبدوز سے ہائپرسونک میزائل "تسیرکون” کا پہلا لانچ کامیاب رہا ۔

19 جولائی کو جدید روسی فریگیٹ "ایڈمرل گورشکوف” سے اس میزائل کا چوتھا کامیاب تجربہ کیا گیا ۔

یہ قابل ذکر ہے کہ "سیوروڈونسک” "ساسن” پروجیکٹ کی ایک روسی ملٹی مشن ایٹمی آبدوز ہے جسے 2015 میں روسی بحریہ نے حاصل کیا تھا ۔ اس روسی ایٹمی آبدوز کی نقل مکانی 13،800 ٹن پانی کے نیچے اور پانی کی سطح پر 830 ٹن ہے ، جس کی رفتار 30 ناٹ ہے اور غوطہ لگانے کی گہرائی 600 میٹر ہے ۔

آبدوز "سیوروڈوِنسک” کروز میزائل "Kha-35” اور "Onyx” کی حامل ہے جنہیں ہائپرسونک "Tsirkon” میزائل سے تبدیل کیا جا سکتا ہے جن کی رفتار 10 ہزار کلومیٹر فی گھنٹہ ہے ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles