امام خامنہ ای: اسلام ایک ابدی مذہب ہے اور قرآن کو بھی ابدی ہونا چاہیے۔

رہبر معظم انقلاب اسلامی حضرت امام سید علی خامنہ ای نے تاکید کرتے ہوئے فرمایا کہ پیغمبر اسلام حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کا لایا ہوا دین ایک ابدی دین ہے اور اس لیے اس کا معجزہ بھی ابدی ہونا چاہیے، یعنی آپ اس کے منبع سے گھونٹ پی سکتے ہیں۔ اس کا علم پوری تاریخ میں کسی بھی مرحلے پر آپ کی زندگی کے تقاضوں کو پورا کرتا ہے۔” آیت اللہ خامنہ ای کی یہ تقریر امام خمینی کی صحت کی ہدایات کے مطابق ماہ مبارک رمضان کے پہلے دن قرآن کریم کی تلاوت کے لیے منعقدہ ایک تقریب کے دوران ہوئی جس میں متعدد بہترین قراء کرام کی موجودگی میں حسینیہ یہ روزے اور قرآن مجید کی تلاوت کے ذریعے خدا کے قریب ہونے کا موقع ہے۔ رہبر معظم انقلاب اسلامی نے رمضان المبارک کے بابرکت مہینے کو مہمان نوازی اور وسیع الہی رحمت کا مہینہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ "قرآن سے دلوں اور قرابت داریوں کی تطہیر اور اس میں تدبر و تفہیم ایک اہم عنصر ہے۔ تاکہ انسان عظیم خالق کی مہمان نوازی سے مستفید ہو سکے۔” آیت اللہ خامنہ ای نے فرمایا: خدا کی عظیم مہمان نوازی میں داخل ہونے کے لیے خالق کی پکار پر لبیک کہنے کے لیے انسان کے عزم کی ضرورت ہے، انہوں نے مزید کہا کہ اگر ہم خدا کی مہمان نوازی میں داخل ہونے میں کامیاب ہو گئے تو ہمیں اس سے قریب ہونے کا منفرد موقع ملے گا۔ خدا، اور اس سے بلند کوئی چیز نہیں ہے جس کا تصور کیا جا سکتا ہے۔” رہبر معظم انقلاب اسلامی نے رمضان المبارک کے بابرکت مہینے کی برکات اور مواقع کا ذکر کرتے ہوئے فرمایا: یہ برکات درحقیقت خدا کا قرب حاصل کرنے کے ناقابل تلافی مواقع ہیں، لہٰذا ہمیں چاہئے کہ خدا سے عاجزی اور تواضع کے ساتھ اس سے فائدہ اٹھاتے ہوئے کامیابی کی دعا کریں۔ موقع اور گناہوں سے بچنا۔”

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles