ہسپانوی جزیرے پر لاوے کا اخراج تاحال جاری ، رہائشیوں کو گھروں میں رہنے کی اپیل

ہسپانوی حکام نے لا پالما جزیرے کے کئی ہزار باشندوں کو کمبرے ویجا آتش فشاں کے مسلسل پھوٹ پڑنے کے درمیان ہوا کے خراب معیار کی وجہ سے گھروں میں رہنے کا حکم دیا ہے ۔ ایمرجنسی سروسز نے بدترین متاثرہ دو شہروں لاس للانوس ڈی اریڈین اور ایل پاسو کے رہائشیوں کو لاک ڈاؤن کا حکم جاری کیا ۔

ایمرجنسی سروسز نے ایک بیان میں کہا کہ نئی بندش موسمی حالات کا نتیجہ ہے جو گیسوں کی کھپت کو روکتی ہے اور انہیں فضا کی نچلی سطح پر رکھتی ہے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس بندش سے تقریبا 3500 افراد متاثر ہوں گے ۔

حکام نے متاثرہ افراد کو اپنے گھروں میں رہنے اور ہیٹنگ اور ایئر کنڈیشنگ کے ذرائع بند کرنے کا بھی کہا تاکہ بیرونی ہوا کو اندر جانے سے روکا جا سکے ۔ حکام نے پہلے سان بورونڈن ، مرینا الٹا ، مرینا باجا اور لا کونڈیسا کے علاقوں میں بندش عائد کی تھی ۔

19 ستمبر کو آتش فشاں پھٹنے کے بعد سے تقریبا 6000 افراد کا انخلاء کیا گیا ہے ۔ آتش فشاں نے تقریبا 83،000 افراد کے جزیرے پر 800 سے زائد عمارتوں کو تباہ کر دیا جو کہ کینیری جزیروں میں سے ایک جزیرہ ہے ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles