آکلینڈ میں چاقو سے حملہ ، پولیس نے مجرم کو ہلاک کر دیا

نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم جیسنڈا آرڈرن نے اعلان کیا ہے کہ ایک "دہشت گرد” کو آکلینڈ میں ایک سپر مارکیٹ میں 6 افراد کو چاقو کے وار سے زخمی کرنے کے بعد پولیس نے گولی مار دی ۔

آرڈرن نے کہا ہے کہ آج جو کچھ ہوا وہ ناقابل بیان ہے ، یہ نفرت انگیز عمل ہے ۔ حملہ آور سری لنکن شہری ہے جو 2011 میں نیوزی لینڈ آیا تھا ۔

نیوزی لینڈ پولیس نے بتایا کہ اس سے قبل انہوں نے ایک شخص کو گولی مار کر ہلاک کر دیا تھا جس نے آکلینڈ شاپنگ مال میں کم از کم پانچ افراد کو چاقو مار کر زخمی کر دیا تھا ۔ پولیس نے اس شخص کو تلاش کیا اور اسے گولی مار دی جس سے وہ موقع پر ہی ہلاک ہوگیا ۔ حملے کے محرکات ابھی تک نامعلوم ہیں ۔

نیوزی لینڈ 15 مارچ 2019 کو کرائسٹ چرچ کی دو مساجد میں ایک سفید فام بالادستی پسند دہشت گرد نے 51 افراد کی ہلاکت کے بعد سے ہائی الرٹ پر ہے ۔

مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
مواضيع ذات صلة
Related articles